پاکستان کا مطلب کیا لا الہ الا اللہ محمد رسول اللہ،یہ وہ نعرہ ہے جو تحریک پاکستان کے دوران برصغیر کی گلیوں میں گونجتا رہا ہے۔ہاں جی اسلام کے نام پر حاصل کئے جانے والے اس ارض وطن کو بھارت سے ایک دن قبل 14اگست1947ء کو آزادی نصیب ہوئیاور بھارت 15اگست 1947ء کو آزاد ہوا۔پاکستان کا کنٹری کوڈ 92ہے جبکہ بھارت کا کنٹری کوڈ91ہے۔ بڑی عجیب بات ہے جو ملک پہلے آزاد ہورہا ہے اُسے کنڑی کوڈ (92)بعد والا نمبر دیا جا رہا ہے اور جو ملک بعد میں آزادہوا اُس کو پہلے(91) والا نمبر دیا جا رہا ہے۔یہ بات سمجھ سے باہر ہے۔۔لیکن ایسا بھی نہیں کہ اس گتھی کو سلجھایا نہ جا سکے،جن کی نظر کریمانہ سے پاکستان بنا،جن کے روحانی تصرف سے آزادی کا سورج مسلمانان برصغیر کو دیکھنا نصیب ہوا۔اُن کے نام مبارک کا عدد مسلمان ملک کو ہی ملنا تھا۔یہ کیسا ممکن تھا کہ اُس ہستی کے نام نامی اسم گرامی کے عدد کا تعلق بھارت سے قائم ہوتا۔جنہوں نے اپنے روحانی تصرف سے پاکستان کو قائم کیا،جو کائنات کے وزیرا اعظم ہیں جن کو ساری دنیا کی حکومت عطا کی گئی ان کے نام نامی اسم گرامی کے عدد مبارک92کا کوڈ بھی پاکستان کو ہی ملا۔اور اس کے ساتھ ایک اور اہم بات پاکستان کے نقشے(map) کو دیکھیں تو واضح پتا چلتا ہے کہ اس میں نام نامی اسم گرامی مبارکہ “محمد “لکھا ہوا۔

سید غضنفر حسین بخاری کی کتاب “بانوے” سے اقتباس